Shikwa Poetry In Urdu Sms

 Shikwa Poetry In Urdu Sms



Shikwa e hijar pe sar kaat k farmaty hain Shikwa Poetry

Shikwa Poetry In Urdu Sms




Shikwa e hijar pe sar kaat k farmaty hain
Phir karoge kabhi is munh se shikayat meri

شکوہِ ہجر پہ سر کاٹ کے فرماتے ہیں
پھر کرو گے کبھی اس منہ سے شکایت میری 


Zara si baat thi arz e tamanna par bigad baithy
Wo meri umr bhar ki dastan e dard kiya sunty

ذرا سی بات تھی عرضِ تمنا پر بگاڑ بیٹھے
وہ میری عمر بھر کی داستانِ درد کیا سنتے 

Koi charagh jalata nahi saliqe se
Magr sabhi ko shikayat hawa se hoti hay 

کوئی چراغ جلاتا نہیں سلیقے سے
مگر سبھی کو شکایت ہوا سے ہوتی ہے 

Wo karen bhi to kin alfaz mein tera shikwa
Jin ko teri nigah e lutf ne barbad kiya

وہ کریں بھی تو کن الفاظ میں تیرا شکوہ
جن کو تیری نگاہِ لُطف نے برباد کیا 

Dekhny wala koi mily to dil k daagh dikhaun
Ye nagri andhon ki nagri kis ko kiya samjhaun

دیکھنے والا کوئی ملے تو دل کے داغ دکھاؤ
یہ نگری اندھوں کی نگری کس کو کیا سمجھاؤ 

Han unhin logon se duniya mein shikayat hy hamen
Han wahi log jo aksar hamen yaad aae hain

ہاں انہیں لوگوں سے دنیا میں شکایت ہے ہمیں
ہاں وہی لوگ جو اکثر ہمیں یاد آئے ہیں 

Gila shikwa poetry in urdu sms


Sunega kon meri chak_damani ka afsana
Yahan sb apny apny pairahan ki baat karty hain

سنے گا کون میری چاک دامنی کا افسانہ
یہاں سب اپنے اپنے پیراہن کی بات کرتے ہیں 

Gila shikwa quotes in urdu

Bada maza ho jo mahshar mein ham karen shikwa
Wo minaton se kahen chup raho khuda k liye

بڑا مزہ ہو جو محشر میں ہم کریں شکوہ
وہ منتوں سے کہیں چپ رہو خدا کے لئے 

Shikwa e narasai karty hain Shikwa shayari in urdu

Ham ajab hain k us ki bahon mein
Shikwa e narasai karty hain

ہم عجب ہیں کہ اس کی باہوں میں
شکوہِ نارسائی کرتے ہیں 

aaj tak koi gila nahi kiya Gila poetry urdu

Kaisy kahen k tujhko bhi ham se hay wasta koi
Tu ne to ham se aaj tak koi gila nahi kiya

کیسے کہیں کہ تجھ کو بھی ہم سے ہے واسطہ کوئی
تو نے تو ہم سے آج تک کوئی گِلہ نہیں کیا


Ghairon se kaha tum ne Gila shikwa in urdu

Ghairon se kaha tum ne ghairon se suna tum ne
Kuch ham se kaha hota kuch ham se suna hota

غیروں سے کہا تم نے غیروں سے سنا تم نے
کچھ ہم سے کہا ہوتا کچھ ہم سے سنا ہوتا

Ab koi shikwa ham nahi karty Shikwa sms

Dil ki takleef kam nahi karty
Ab koi shikwa ham nahi karty

دل کی تکلیف کم نہیں کرتے
اب کوئی شکوہ ہم نہیں کرتے 

Ek hamari sahar nahi hoti Urdu poetry

Raat aa kar guzar bhi jaati hay
Ek hamari sahar nahi hoti

رات آ کر گُزر بھی جاتی ہے
اِک ہماری سحر نہیں ہوتی

Post a Comment

0 Comments