Matlabi Poetry



matlabi poetry


Aay zindagi jala diya hamne wo dil
Jisme matlabi log basa karty they

اے زندگی جلا دیا ہم نے وہ دل
جس میں مطلبی لوگ بسا کرتے تھے


matlabi poetry


Matlabi log khade hain hath mein pathar lekar
Mein kahan tak bhagon shishe ka mukaddar lekar


مطلبی لوگ کھڑے ہیں ہاتھ میں پتھر لیکر
میں کہاں تک بھاگوں شیشے کا مقدر لیکر


matlabi poetry


Matlabi zamana hai nafraton ka qahir hay
Ye duniya dikhti shahid hay aur pilati zahar hay

مطلبی زمانہ ہے _____نفرتوں کا قہر ہے
یہ دنیا دکھاتی شہد ہے اور پلاتی زہر ہے


matlabi poetry


Matlabi log milenge tumhen jab rahon mein a dost
Phir jo mukhlis koi dhundhoge to yaad aaunga

مطلبی لوگ ملیں گے تمہیں جب راہوں میں اے دوست
پھر جو مخلص کوئی ڈھونڈو گے تو یاد آؤں گا


matlabi poetry


Main matlabi nahin hun sahib bus dur ho gaya hun un logon se jinko meri qadar nahin

میں مطلبی نہیں ہوں صاحب
بس دور ہو گیا ہوں ان لوگوں سے
جن کو میری قدر نہیں


matlabi poetry


Mukhes hain to muktsar hain murshid

Matlabi hote to hujhum hota


مخلص ہیں تو مختصر ہیں مُرشد

مطلبی ہوتے ___ تو __ ہجوم ہوتا



Samander bhi teri tarah matlabi nikala

Jaan lekar lehru se kahta hai lash ko kinare laga do


سمندر بھی تیری طرح مطلبی نکلا

جان لیکر لہروں سے کہتا ہے لاش کو کنارے لگادو




Kam aaye na mushkil mein koi yahan

Matlabi dost hain matlabi yaar hain


کام اے نا مشکل میں کوئی یہاں

مطلبی دوست ہیں مطلبی یار ہیں




Matlabi banata hun to zameer deta hai tanay

Mukhles hota hun to zamana jeene nahin deta


مطلبی بنتا ہوں تو ضمیر دیتا ہے طعنے

مخلص ہوتا ہوں تو زمانہ جینے نہیں دیتا




Ham matlabi nahin ke chahane walon ko dhokha de

Bus hamen samajhna har kisi ke bus ki baat nahin


ہم مطلبی نہیں کہ چاہنے والوں کو دھوکہ دیں

بس ہمیں سمجھنا ہر کسی کے بس کی بات نہیں




Duniya bahut matlabi hai sath koi kyon dega

Muft ke yahan kafan nahin milta to bagair gam ki Mohabbat kaun dega


دنیا بہت مطلبی ہے ساتھ کوئی کیوں دے گا

مفت کے یہاں کفن نہیں ملتا تو بغیر غم کی محبت کون دے گا




khafa nahi hoon main kisi se bas dil bhar gaya hay

Jhuthi duniya se aur matlabi logon se


خفا نہیں ہوں میں کسی سے بس دل بھر گیا ہے

جھوٹی دنیا سے اور مطلبی لوگوں سے




Waqt guzar jane ke baad ehsaas hota hai ki tanhai bahtar thi matlabi logon se


وقت گزر جانے کے بعد احساس ہوتا ہے کہ تنہائی بہتر تھی مطلبی لوگوں سے



دورِ جدید کی سب سے گھٹیا ایجاد

عارضی تعلقات اور مطلبی رشتے






Post a Comment

Previous Post Next Post