Top Of Allama Iqbal Poetry In Urdu

Allama Iqbal Poetry In Urdu


Dr. Allama Iqbal is a famous and incomparable poet of Urdu. Allama Iqbal is Pakistan's national poet hero. Allama Iqbal's Sufi poetry is very famous.

Here you have the latest collection of Allama Iqbal's poetry for students.




Tamanna dard e dil ki ho to kar khidmat faqiron ki
Nahi milta ye gauhar badshahon k khazinon me

تمنا دردِ دل کی ھوتو کر خدمت فقیروں کی
نہیں ملتا یہ گوہر بادشاہوں کے خزینوں میں




Amal se zindagi banti hay jannat bhi jahannam bhi
Ye khaki apni fitrat me na nuuri hay na naari hay

عمل سے زندگی بنتی ھے جنت بھی جہنم بھی
یہ خاکی اپنی فطرت میں نہ نوری ھے نہ ناری ھے




Haram e pak bhi Allah bhi Quraan bhi ek
Kuch badi baat thi hoty jo musalman bhi ek

حرمِ پاک بھی اللہ بھی قرآن بھی اِک
کچھ بڑی بات تھی ہوتے جو مسلمان بھی اِک




Ai tair e lahauti us rizq se maut achi
Jis rizq se aati ho parwaaz me kotahi

اے طائر لاھوتی اس رزق سے موت اچھی
جس رزق سے آتی ھو پرواز میں کوتاھی




Haya nahi hay zamany ki aankh me baaqi
Khuda kary k jawani teri rahy be daagh

حیا نہیں ہے زمانے کی آنکھ میں باقی
خدا کرے کہ جوانی تری رہے بے داغ




Duniya ki mahfilon se ukta gaya hon ya rab
Kiya lutf anjuman ka jab dil hi bujh gaya ho

دنیا کی محفلوں سے اُکتا گیا ہوں یا رَب
کیا لُطف انجمن کا جب دل ہی بُجھ گیا ہو




Hazaron saal nargis apni be nuri pe roti hay
Badi mushkil se hota hay chaman me deeda war paida

ہزاروں سال نرگس اپنی بے نوری پہ روتی ہے
بڑی مشکل سے ہوتا ہے چمن میں دیدہ ور پیدا




Nasha pila k girana to sabko aata hay
Maza to tab hay k girton ko thaam le saqi

نشہ پلا کے گِرانا تو سب کو آتا ہے
مزہ تو تب ہے کہ گِرتوں کو تھام لے ساقی




Maana k teri deed k qabil nai hon main
Tu mera shauq dekh mera intazar dekh

مانا کہ تیری دید کے قابل نہیں ہوں میں
تو میرا شوق دیکھ میرا انتظار دیکھ




Sitaron se aagy jahan ur bhi hain
Abhi ishq k imtihaan ur bhi hain

ستاروں سے آگے جہاں اور بھی ہیں
ابھی عشق کے امتحاں اور بھی ہیں

  • Ahmad Faraz

  • Mohsin Naqvi




Dhundta phirta hon main iqbal apny aapko
Aap hi goya musafir aap hi manzil hon main

ڈھونڈتا پھرتا ہوں میں اقبالؔ اپنے آپکو
آپ ھی گویا مسافر آپ ھی منزل ھوں میں




Masjid to bana di shab bhar me iman ki hararat walon ne
Man apna purana paapi hay barson me namazi ban na saka

مسجد تو بنا دی شب بھر میں ایماں کی حرارت والوں نے
من اپنا پرانہ پاپی ھے برسوں میں نمازی بن نا سکا




Ishq bhi ho hijaab me husn bhi ho hijaab me
Ya to khud aashkar ho ya mujhy aashkar kar

عشق بھی ھو حجاب میں حُسن بھی ھو حجاب میں
یا تو خود آشکار ھو یا مجھے آشکار کر




Uqabi ruuh jab bedaar hoti hay jawanon me
Nazar aati hay unko apni manzil aasmanon me

عقابی رُوح جب بیدار ھوتی ھے جوانوں میں
نظر آتی ھے __ اِنکو اپنی منزل آسمانوں میں




Nahi hay na umeed iqbal apni kisht e viran se
Zara naam ho to ye mitti bahot zarkhez hay saqi

نہیں ھے نااُمید اقبال اپنی کشتِ ویراں سے
ذرا نم ھو تو یہ مٹی بہت زرخیز ھے ساقی




Bhari bazm me raaz ki baat kah di
Bada be adab hon saza chahta hon

بھری بزم میں راز کی بات کہہ دی
بڑا بے ادب ھوں سزا چاہتا ھوں




Na pucho mujhse lazzat khanaman barbad rahny ki
Nasheman saikdon maine bna kr phunk daaly

نا پوچھو مجھ سے لَذت خانماں برباد رھنے کی
نشیمن سیکڑوں میں نے بنا کر پھونک ڈالے

    • Mirza Ghalib




Saudagari nahi ye ibadat khuda ki hay
Aay be khabar jaza ki tamanna bhi chod de

سوداگری نہیں یہ عبادت خدا کی ھے
اے بے خبر جزا کی تمنا بھی چھوڑ دے




Aankh jo kuch dekhti hay lab pe aa sakta nahi
Mahv e hairat hon k duniya kiya se kiya ho jaegi

آنکھ جو کچھ دیکھتی ھے لَب پہ آسکتا نہیں
محوِ حیرت ھوں کہ دنیا کیا سے کیا ھو جائیگی




Ye jannat mubarak rahy zahidon ko
K main aapka samna chahta hon

یہ جنت مبارک رھے زاہدوں کو
کہ میں آپکا سامنا چاہتا ھوں




Dil soz se khali hay nigah paak nahi hay
Phir is me ajab kiya k tu bebaak nahi hay

دل سوز سے خالی ھے نگاہ پاک نہیں ھے
پھر اس میں عجب کیا کہ تو بیباک نہیں ھے




Firqa bandi hay kahin aur kahin zatein hain
Kiya zamany me panapne ki yahi baten hain

فرقہ بندی ھے کہیں اور کہیں ذاتیں ھیں
کیا زمانے میں پنپنے کی یہی باتیں ھیں




Jinhen main dhundta tha aasmanon me zaminon me
Wo nikle mary zulmat khana e dil k makinon me

جنہیں میں ڈھونڈھتا تھا آسمانوں میں زمینوں میں
وہ نکلے میرے ظلمت خانہِ دل کے مکینوں میں






Tu qadir o aadil hay magr tery jahan me
Hain talkh bahot banda e mazdoor ki auqaat

تو قادر و عادل ھے مگر تیرے جہاں میں
ہیں تلخ بہت بندہِ مزدور کی اوقات




Aql ayyaar hay sau bhes badal leti hay
Ishq bechara na zahid hay na mulla na hakeem

عقل عیار ھے سو بھیس بدل لیتی ھے
عشق بیچارہ نہ زاہد ھے نہ مُلا نہ حکیم




Mir e arab ko aai thandi hawa jahan se
Mera watan wahi hay mera watan wahi hay

میرِ عرب کو آئی ٹھنڈی ھوا جہاں سے
میرا وطن وہی ھے میرا وطن وہی ھے



Ye kaenat abhi na tamam hay shayad

k aa rahi hay damadam sada e kun faya kun


یہ کائنات ابھی نہ تمام ھے شاید

کہ آرہی ھے دمادم صدائےِ کُن فیکون



     Read More...


  • Tahzeeb Hafi


  • Sagar Poetry


  • Saghar Siddiqui


  • Munir Niazi


  • Parveen Shakir


  • Amjad Islam Amjad


  • Allama Iqbal


  • Khalil Ur Rehman Qamar


  • Mir Taqi Mir


  • Mirza Ghalib

  • Ahmad Faraz

  • Mohsin Naqvi


  • Sad Poetry

  • Urdu Ghazal

  • Urdu Poetry

  • Love Poetry