Aankhon Mein Raha Dil Me Utar Kar Nahin Dekha | Sad Ghazal In Urdu

 Sad Ghazal




Aankhon me rha dil me utar kr nahi dekha

Kashti k musafir ne samundar nahi dekha


Be waqt agr jaunga sb chaunk padenge

Ek umar hui din me kabhi ghar nahi dekha


Jis din se chala hon meri manzil pe nazar hai

Aankhon ne kabhi meel ka pathar nahi dekha


Ye phool mujhy koi virasat me mily hain

Tumne mera kanton bhara bistar nahi dekha


Yaaron ki mohabbat ka yaqeen kr liya Maine

Phoolon me chupaya hua khanjar nahi dekha


Mahboob ka ghar ho k buzurgon ki zaminein

Jo chod diya phir use mud kr nahi dekha


Khat aisa likha hay k nagine se jade hain

Wo haath ki jis ne koi zevar nahi dekha


Pathar mujhy kahta hay mera chahne wala

Main mom hun usne mujhy chu kar nahi dekha

 


آنکھوں میں رہا دل میں اُتر کر نہیں دیکھا

کشتی کے مُسافر نے سمندر نہیں دیکھا


بے وقت اگر جاؤنگا سب چونک پڑیں گے

اَک عمر ہوئی دن میں کبھی گھر نہیں دیکھا


جس دن سے چلا ھوں میری منزل پہ نظر ھے

آنکھوں نے کبھی میل کا پتھر نہیں دیکھا


یہ پھول مجھے کوئی وراثت میں ملے ہیں

تم نے میرا کانٹوں بھرا بستر نہیں دیکھا


یاروں کی محبت کا یقین کر لیا میں نے

پھولوں میں چُھپایا ہوا خنجر نہیں دیکھا


محبوب کا گھر ہو کہ بزرگوں کی زمینیں

جو چھوڑ دیا پھر اسے مُڑ کر نہیں دیکھا

 

خط ایسا لکھا ھے کہ نگینے سے جُڑے ھیں

وہ ہاتھ کہ جس نے کوئی زیور نہیں دیکھا


پتھر مجھے کہتا ھے میرا چاہنے والا

میں موم ھوں اس نے مجھے چُھوکر نہیں دیکھا