Best Of Gajray Poetry In Urdu 2 Lines (2023)

 Gajray Poetry


gajray poetry, gajray poetry in urdu, love gajray poetry, gajra love gajray poetry, gajray poetry in urdu 2 lines, gajra gajray poetry in urdu, gajray poetry in urdu copy paste, gajray poetry in urdu text, phool gajray poetry.


gajra gajray poetry, romantic gajray poetry, gulab gajray poetry in urdu, love gajray poetry in urdu, gajray poetry in english, gajray poetry sad, urdu shayari gajray poetry.


gajray poetry


Chori tuti tu tere ishq ka gajra pahna
Khali rakhi hi nahin hamne kalai apni

چوڑی ٹوٹی تو تیرے عشق کا گجرا پہنا
خالی رکھی ہی نہیں ھم نے کلائی اپنی




Woh ek phool jo khilney se rootha baitha hai
Usey batao ki gajrey mein tera naam bhi hai

وہ اِک پھول جو کھلنے سے روٹھا بیٹھا ھے
اسے بتاؤ کہ گجرے میں تیرا نام بھی ھے




Rukhsar aise timtimatey hain janab k

Pehne hun jaise Chandni gajray gulaab k


رخسار ایسے ٹمٹماٹے ھے پہنے ھو

جیسے چاندنی گجرے گلا کے




Chori tuti tu tere ishq ka gajra pahna

Khali rakhi hi nahin hamne kalai apni


چوڑی ٹوٹی تو تیرے عشق کا گجرا پہنا

خالی رکھی ہی نہیں ھم نے کلائی اپنی




Chand tota na jaye ga aap se

Aap aisa kejiye gajray la dejiye


چاند ٹوٹا نہ جائیگا آپ سے

آپ ایسا کیجیئے گجرے لا دیجئے



Sad Poetry



Main gajre se khush ho jaati hun yaaron

Tum tare todne aasman per mat chale jana


میں گجرے سے خوش ھو جاتی ھوں یارو

تم تارے توڑنے آسمان پر مت چلے جانا





Mahak utha Hai Sara shahar gulab Ki Khushbu se

Lagta Hai aaj fir saje Hain gajre uske hathon Mein


مہک اُٹھا ھے سارا شہر گلاب کی خوشبو سے

لگتا ھے آج پھر سجے ھیں گجرے اسکے ہاتھوں میں





Chand tare mushkil Hain mohtarma

Aik gajre per man jao na


چاند تارے مُشکل ھیں محترمہ

ایک گجرے پر مان جاؤ نہ





Woh kahta Hai bahut jache ga Tere hathon Mein

Woh gajra Jo Main pahnaunga


وہ کہتا ھے ﺑﮩﺖ ﺟﭽﮯ ﮔﺎ تیرے ﮨﺎﺗﮭﻮﮞ ﻣﯿﮟ

ﻭﮦ ﮔﺠﺮﺍ ﺟﻮ میں ﭘﮩﻨﺎؤں گا





Hay meri itni si hasrat Hai

Tu pahnae Mujhe gajra Apne hath se


ہائے میری اتنی سی حسرت ھے

تو پہنائے مجھے گجرا اپنے ہاتھ سے





Tumhay Pasand hain Gajray

Haan tum se poch Raha


تمہیں پسند ہیں گزرے ہاں تم سے پوچھ رہا





Han larki ko soney ke kangan bhaty hain

Ek wo hain Jo gajray k liye Pagal hain


ہاں لڑکی کو سونے کے کنگن بھیجے ھیں

اِک وہ ھیں جو گزرے کیلئے پاگل ھو




Mohabbat mein gajray sone ki churiyan se zida qeemti hoty hain


محبت میں گجرے سونے کی

چوڑیوں سے زیادہ قیمتی ہوتے ھیں 




Jin ki khushbuu udas karti thi 

Woh bhi gajrey sambhaal kar rakhy 


جن کی خُوشبو اُداس کرتی تھی

وہ بھی گجرے سنبھال کر رکھے





Rukhsar aise timtimatey hain janab k

Pehne hun jaise Chandni gajray gulaab k


رخسار ایسے ٹمٹماٹے ھے پہنے ھو

جیسے چاندنی گجرے گلاب کے





Tum ne gajrey saja liye sar mein

Main to aanchal khareed laya tha


تم نے گجرے سجا لیے سر میں

میں تو عانچل خرید لایا تھا 




Woh ek phool jo khilney se rootha baitha hai

Usey batao ki gajrey mein tera naam bhi hai


وہ اِک پھول جو کھلنے سے روٹھا بیٹھا ھے

اسے بتاؤ کہ گجرے میں تیرا نام بھی ھے





Aa bhi ja ke tere intezaar mein

Kali kali mere gajrey ki kali mei hai


اب بھیجا کے تیرے انتظار میں

کالی کالی میرے گجرے کی کالی میں ھے





Meri sadagi pe mat jaaiye

Main sone Ki chudiyan thukra kar

Phoolon Ke Ek gajre per

Mar jaane wali ladki hun


‏میری سادگی پہ مت جائیے

میں سونے کی چوڑیاں ٹھکرا کر

پھولوں کے اِک گجرے پر 

مر جانے والی لڑکی ھوں




Agar aisa tha bhi To aise batana Nahin chahie

Taluk ko aisa koi bhi tamasha Nahin chahie

Mera Dil yeh kahta Hai woh ine donon Kuchh pareshan Hai

Magar yeh bhi Tay hai use Mera shana Nahin chahie

Suno yeh Jo murjhaye patte hain na pack kar do sabhi

yeh gande gulab aur chambeli ka gajra Nahin chahie

Nahin shehzaade hakikat Ki duniya Badi talakh Hai

Tujhe Mere khwabon se Bahar nikalna Nahin chahie


اگر ایسا تھا بھی تو ایسے بتانا نہیں چاھیے

تعلق کو ایسا کوئی بھی تماشا نہیں چاھیے

میرا دل یہ کہتا ھے وہ ان دنوں کچھ پریشان ھیں

مگر یہ بھی طے ھے اسے میرا شانہ نہیں چاھیے 

سنو یہ جو مُرجھائے پتے ھیں نا پیک کردو سبھی

یہ گیندے گلاب اور چنبیلی کا گجرا نہیں چاھیے

نہیں شاہزادے حقیقت کی دنیا بڑی تلخ ھے

تجھے میرے خوابوں سے باہر نکلنا نہیں چاھیے





Pyar aankhon se jataya To bura maan gaye

Haal e Dil humne sunaya To bura Man Gaye

Apne gajray ke Har Ek phool ki tarif Suni

Zakhm e Dil humne dikhaya To bura Man Gaye

Woh to har roj rulate Hain ghataun Ki Tarah

Humne Ek roj rulaya To bura Man Gaye

Sirf itni si khata per hamen dushman Jana

Sar Ko kadmon Mein jhukaya To bura Man Gaye


پیار آنکھوں سے جتایا تو بُرا مان گئے

حالِ دل ھم نے سنایا تو بُرا مان گئے

اپنے گجرے کے ہر اِک پھول کی تعریف سنی

زخمِ دل ھم نے دِکایا تو بُرا مان گئے

وہ تو ھر روز رُلاتے ھیں گھٹاؤں کی طرح

ھم نے اِک روز رُلایا تو بُرا مان گئے

صرف اتنی سی خطا پر ھمیں دشمن جانا

سر کو قدموں میں جُھکایا تو بُرا مان گئے


Read More...


  • Tahzeeb Hafi


  • Sagar Poetry


  • Saghar Siddiqui


  • Munir Niazi


  • Parveen Shakir


  • Amjad Islam Amjad


  • Allama Iqbal


  • Khalil Ur Rehman Qamar


  • Mir Taqi Mir


  • Mirza Ghalib

  • Ahmad Faraz

  • Mohsin Naqvi


  • Sad Poetry

  • Urdu Ghazal

  • Urdu Poetry

  • Love Poetry






۔۔